From
Subject
Time (UTC)
notification+kr4kkamr2nyx@facebookmail.com
[Karachi Karachi Hai ε(●̮̮̃•̃)зOnce Againε(●̮̮̃•̃)з] ‎‫#میت_پر_سوگ:‬‎
2015-05-07 16:03:50
To: Karachi Karachi Hai ε(●̮̮̃•̃)зOnce Againε(●̮̮̃•̃)з
From: notification+kr4kkamr2nyx@facebookmail.com
Subject:

[Karachi Karachi Hai ε(●̮̮̃•̃)зOnce Againε(●̮̮̃•̃)з] ‎‫#میت_پر_سوگ:‬‎


Received: 2015-05-07 16:03:50
  Bilal Hussain posted in Karachi Karachi Hai ε(●̮̮̃•̃)зOnce Againε(●̮̮̃•̃)з       Bilal Hussain 7 May at 09:03   #میت_پر_سوگ: ₹ زینب بنت ابی سلمہ نے خبر دی کہ ابوسفیان رضی اللہ عنہ کی وفات کی خبر جب شام سے آئی تو ام حبیبہ رضی اللہ عنہا (ابوسفیان رضی اللہ عنہ کی صاحبزادی اور ام المؤمنین) نے تیسرے دن ”صفرہ“ (خوشبو) منگوا کر اپنے دونوں رخساروں اور بازوؤں پر مل۔ا اور فرمایا کہ اگر میں نے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے یہ نہ سنا ہوتا کہ کوئی بھی عورت جو اللہ اور آخرت کے دن پر ایمان رکھتی ہو اس کے لیے جائز نہیں ہے کہ وہ شوہر کے سوا کسی کا سوگ تین دن سے زیادہ منائے اور شوہر کا سوگ چار مہینے دس دن کرے۔ تو مجھے اس وقت اس خوشبو کے استعمال کی ضرورت نہیں تھی"۔ [صحیح بخاری۔کتاب الجنائز۔حدیث#1280] ₹ زینب بنت ابی سلمہ رضی اللہ عنہا نے خبر دی کہ وہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی زوجہ مطہرہ حضرت ام حبیبہ رضی اللہ عنہا کے پاس گئی تو انہوں نے فرمایا کہ میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے سنا ہے کہ: "کوئی بھی عورت جو اللہ اور یوم آخرت پر ایمان رکھتی ہو اس کے لیے شوہر کے سوا کسی مردے پر بھی تین دن سے زیادہ سوگ منانا جائز نہیں ہے۔ ہاں شوہر پر چار مہینے دس دن تک سوگ منائے"۔ پھر میں حضرت زینب بنت جحش رضی اللہ عنہا کے یہاں گئی جب کہ ان کے بھائی کا انتقال ہوا۔ انہوں نے خوشبو منگوائی اور اسے لگایا۔ پھر فرمایا کہ مجھے خوشبو کی کوئی ضرورت نہ تھی لیکن میں نے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کو منبر پر یہ کہتے ہوئے سنا ہے کہ کسی بھی عورت کو جو اللہ اور یوم آخرت پر ایمان رکھتی ہو ‘ جائز نہیں ہے کہ کسی میت پر تین دن سے زیادہ سوگ کرے۔ لیکن شوہر کا سوگ (عدت) چار مہینے دس دن تک کرے"۔ [صحیح بخاری۔کتاب الجنائز۔حدیث#1281/1282]       Like     Comment    
   
 
   Karachi Karachi Hai ε(●̮̮̃•̃)зOnce Againε(●̮̮̃•̃)з
 
   
   
 
Bilal Hussain posted in Karachi Karachi Hai ε(●̮̮̃•̃)зOnce Againε(●̮̮̃•̃)з
 
   
Bilal Hussain
7 May at 09:03
 
#میت_پر_سوگ:

₹ زینب بنت ابی سلمہ نے خبر دی کہ ابوسفیان رضی اللہ عنہ کی وفات کی خبر جب شام سے آئی تو ام حبیبہ رضی اللہ عنہا (ابوسفیان رضی اللہ عنہ کی صاحبزادی اور ام المؤمنین) نے تیسرے دن ”صفرہ“ (خوشبو) منگوا کر اپنے دونوں رخساروں اور بازوؤں پر مل۔ا اور فرمایا کہ اگر میں نے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے یہ نہ سنا ہوتا کہ کوئی بھی عورت جو اللہ اور آخرت کے دن پر ایمان رکھتی ہو اس کے لیے جائز نہیں ہے کہ وہ شوہر کے سوا کسی کا سوگ تین دن سے زیادہ منائے اور شوہر کا سوگ چار مہینے دس دن کرے۔ تو مجھے اس وقت اس خوشبو کے استعمال کی ضرورت نہیں تھی"۔
[صحیح بخاری۔کتاب الجنائز۔حدیث#1280]

₹ زینب بنت ابی سلمہ رضی اللہ عنہا نے خبر دی کہ وہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی زوجہ مطہرہ حضرت ام حبیبہ رضی اللہ عنہا کے پاس گئی تو انہوں نے فرمایا کہ میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے سنا ہے کہ: "کوئی بھی عورت جو اللہ اور یوم آخرت پر ایمان رکھتی ہو اس کے لیے شوہر کے سوا کسی مردے پر بھی تین دن سے زیادہ سوگ منانا جائز نہیں ہے۔ ہاں شوہر پر چار مہینے دس دن تک سوگ منائے"۔ پھر میں حضرت زینب بنت جحش رضی اللہ عنہا کے یہاں گئی جب کہ ان کے بھائی کا انتقال ہوا۔ انہوں نے خوشبو منگوائی اور اسے لگایا۔ پھر فرمایا کہ مجھے خوشبو کی کوئی ضرورت نہ تھی لیکن میں نے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کو منبر پر یہ کہتے ہوئے سنا ہے کہ کسی بھی عورت کو جو اللہ اور یوم آخرت پر ایمان رکھتی ہو ‘ جائز نہیں ہے کہ کسی میت پر تین دن سے زیادہ سوگ کرے۔ لیکن شوہر کا سوگ (عدت) چار مہینے دس دن تک کرے"۔
[صحیح بخاری۔کتاب الجنائز۔حدیث#1281/1282]
 
   Like
   Comment
 
 
   
   
 
View Post
   
Edit Email Settings
 
   
   
Reply to this email to comment on this post.
 
   
   
 
This message was sent to deleted@email-fake.pp.ua. If you don't want to receive these emails from Facebook in the future, please unsubscribe.
Facebook, Inc., Attention: Department 415, PO Box 10005, Palo Alto, CA 94303